مضامین /   Articles

مولانا سید محمد قاسم شاہ صاحب بخاریؒ (2019-03-28)

مولانا سید محمد قاسم شاہ صاحب بخاریؒ

آپ سرینگر میں ۱۹۱۰ ء میں پیدا ہوئے والدہ ماجدہ نے محمد قاسم نام رکھا ۔آپ نے ابتدائی تعلیم اپنے خاندان کے بزرگوں اور اپنے والد صاحب سے حاصل کی ۔بارہ سال کی عمر میں والد صاحب کا سایہ سر سے اٹھ گیا ۔اس کے بعد تکمیل تعلیم کے لئے ہجرت کی اور گھر والوں کو بھی اس سفر کے متعلق اطلاع نہیں دی کہ کہیں وہ روڑے نہ اٹکائیں ۔آئندہ تعلیم کے لئے آپنے امرتسر کا انتخاب کیا ۔وہاں آپ نے مولانا عبدالکبیر صاحب کے مدرسہ دار العلوم نصرت الحق میں داخلہ لیا ۔اس مدرسہ میں ڈیڑھ سال گذارنے کے بعداپنے دیگر ہم سبق حضرات کی معیت میں زیادہ معیاری تعلیم حاصل کرنے کے لئے دہلی چلے گئے اور مدرسہ نعمانیہ میں تین سال رہے ۔اس کے بعد ایک سال مدرسہ صدیقیہ دہلی میں گذارا ۔وہاں سے دار العلوم دیوبند آئے اور ادھر ایک سال رہے ۔اس کے بعد پھر مدرسہ صدیقیہ دہلی واپس آئے اور اسی مدرسہ میں درس نظامی کی تکمیل کی ۔اس کے بعد اورینٹل کالج دہلی میں داخلہ لیا ۔چھ مہینے انگریزی پڑھی۔پھر چھوڑا ۔دورہ حدیث کے لئے مدرسہ امینیہ میں داخلہ لیا ۔ایک سال کے بعد مفتی کفایت اﷲ کے مدرسہ سے دورہ حدیث سے فارغ ہوئے ۔واپس وطن آنے کے بعد کچھ عرصہ سرکاری ملازمت کی ۔بعد میں مستعفی ہوئے ۔دو سال شاہی مسجدسرینگر میں امامت کی ۔اس کے بعد پچاس برس تک مسجد شریف سکہ ڈافرکے امام رہے ۔۸فروری ۲۰۰۰ ء کو رحمت حق ہو گئے ۔آپ کئی کتابوں کے مصنف ہیں ۔آپ نے کشمیری زبان میں قرآن شر یف کا ترجمہ کیا ۔پہلے سے ہی قائم شدہ انجمن تبلیغ ا لاسلام میں نئی روح پھینک دی ۔وظیفہ شیئاً اﷲ کے متعلق نرم گوشہ رکھتے تھے ۔شیخ محمد عبد اﷲ کی نیشنل کانفرنس کے ہمیشہ حامی رہے سرینگر میں ا یک دار العلوم کی بنیاد ڈالی جو اس وقت حنفی عربی کالج کی شکل میں اپنا کام کاج کر رہا ہے ۔

بحوالہ ماہنامہ راہ نجات" داعئی توحید نمبر"
از آسی غلام نبی وانی صاحب۔


درج ذیل مقالہ پڑھنے کے لئے ہیڈ لائن پر کلک کریں



Our Total Visitors

You can also send your Articles/Research papers and reviews to RNB on this mail salikbilal.rnb@gmail.com